لالہ لئیق شاہ ،ڈاکٹر بھائی اور دیگر کھلاڑیوں کی رسہ کشی

Sabih Tariq

Super Moderator
Dynamic Brigade
Teacher
Writer
Joined
May 5, 2018
Threads
25
Messages
837
Likes
1,449
Points
392
Location
Central
#1

میدان میں سیٹیاں اور ڈھول بج رہے تھے جس کی تھاپ پہ بعض تماش بین اچھل اچھل کر ایک ٹانگ پر رقص کرنے لگے۔۔۔ڈھول کی آواز نے سماں باندھا ہواتھا۔۔۔جو دیسی کھیل کے میدان میں الگ ایک پہچان رکھتاہے۔
ان بنگڑوں میں بعض دل جلوں کی آوازیں بڑی صاف تھیں ۔۔۔’’ہاری نہ وے‘‘کباب تہ سموسے سانوں بھی دینا‘‘۔۔۔۔’’اوے اج تو ہارا تے فر یاری مکی سمجھ‘‘۔
۔۔۔’’ آج کے دن مخالف ٹیم کابٹن دبادو‘‘۔
:D
"ایک آواز بلند اور واضح تھی ،اگر" ہارے تو عارف والا میں قدم نہ رکھنا

اسو به خوشحاله نه شئ

یہ کھیل کا میدان تھا جس میں دو زبردست نامی گرامی پہلوانوں اور کھلاڑیوں کی ٹیمیں کے مابین رسہ کشی کا مقابلہ ہونے جارہاتھا۔۔۔
ایک طرف لالہ لئیق شاہ،افضل بھائی ،ناٹی میر ،حماد ،درویش اور دوسری جانب ڈاکٹر بھائی، ایکسٹو، ابودجانہ ،عمر اسلام ،اے ایم آمنے سامنے تھے

میدان میں جوش وخروش تھا، شائقین اپنی اپنی ٹیموں اور پسندیدہ کھلاڑیوں کو زبردست انداز میں حوصلہ افزائی کررہے تھے۔۔۔

کچھ ایسے جملے بھی کسے جارہے تھے جو تماش بینوں میں موجود ان کے دشمن ہی ہوسکتے تھے،حاسدین کو کھیل کھیل میں انتقام کا موقع بھی مل گیاتھا۔

یہ مقابلہ تفریح کیساتھ خوش خوراکی کا بھی ایک بہانہ تھا، جو ٹیم جیت جاتی اس کے حصے میں رسے سے باندھا گیاکھانے کا سامان آجاتا،چنانچہ بھوکے کھلاڑی جوش و جذبے سے زور آزمائی کرتے۔۔۔۔

اس پروگرام کے سپانسر چوہدری الیاس وغیرہ تھے جنہوں نے شکاری ٹیم کی خدمات حاصل کی تھیں،شیر مارنے کے بعد وہ پوری بستی ڈاکٹر بھائی کی فین ہوگئی تھی ۔
یہ ایک دعوت تھی لیکن کھیل بہانہ تھا
;)
رسے کے درمیان ،مختلف بیگس میں کھانے کاسامان پیک کیاہوا لٹکاتھا،جس میں کباب،سموسے،چکن فرائی ،حلوے،بادام اور میوے وغیرہ شامل تھے۔۔۔مزید پلاؤ،بریانی ،میٹھے الگ تیار ہورہے تھے جو بعد میں پیش کیے جاتے۔۔۔

مقابلے سے پہلے حرارت بڑھانے کی نیت سے کھلاڑی ورزش کرنے لگے،کچھ الٹے سیدھے بھی ہوئے تاکہ ان کے جسم زور لگاتے ہوئے جلد تھکن کا شکار نہ ہوسکیں۔۔۔لالہ لئیق شاہ قدرے فربہ تھے انہیں ریفری انکل اردو لور نے کہا کہ کمر کے گرد رسہ لپیٹ کر آخر میں مڈھ(مطلب درخت کے تنے جیسی مضبوطی جس کی جڑیں زمین میں پھیل جاتی ہیں)بن جانا، لالہ نے کہاکہ وہ ایسا ہی کھلاڑی ہے:pagal:۔

ایکسٹو کی نگاہیں:mad: ریفری انکل پر لگیں ہوئیں تھیں اس کو شک ہواکہ میچ فکسنگ ہوسکتی ہے ،لہذا ایکسٹو نے اپنی عادت کے
مطابق یہاں بھی جاسوسی شروع کردی۔۔۔۔

کچھ دیر کے بعدریفری انکل اردو لورنے سیٹی بجائی اور حاضرین کو متوجہ کرتے ہوئے ہاتھ میں پکڑے سپیکر پر اعلان کیا۔

دوستو! آج کا مقابلہ بہت سخت ہے ،معصوم بچہ حماد اور ناٹی میر، اپنا پسندیدہ کھانا کسی صورت ہار کی شکل میں مخالف ٹیم کے حوالے نہیں کریں گے ،لیکن دوسری جانب ،ڈاکٹر ،اے ایم ،ایکسٹوابودجانہ طاقت و قوت میں کم نہیں،اس لیے یہ مقابلہ نہایت سخت ثابت ہوگا۔

تو آج پورے جوش خروش کے ساتھ ہم دیکھیں گے کہ کون سی ٹیم اچھے کھیل اور زیادہ طاقت کا مظاہر ہ کرتی ہے۔
ریفری انکل اردو لور نے کہا، رولز یہ ہیں کہ اگر تھک جائیں تو مقابلہ روک دیاجائے گا،پیاس لگے گی تو وقفہ ہوگا،اگر کسی کھلاڑی کو دورانِ مقابلہ تیل کی مالش مولش کرنی ہے تو وہ مجھے بتائے گاتاکہ کھیل روک کر اسے مالش مولش کا موقع دیاجائے۔۔۔
ایکسٹو نے کہا!:mad:یہ رسہ کشی ہے مقابلہ ایک دفعہ شروع ہوگیا توکسی ٹیم کی ہار جیت پر ہی ختم ہوگا،تمام کھلاڑیوں نے رولز کے خلاف آواز بلند کی تو ریفری انکل نے کہا" اچھا ٹھیک ہے" مقابلہ شروع ہوکر ہار جیت پر ختم کرنے تک محدود رہتے ہیں۔۔۔۔:hathora:۔
٭٭
مقابلہ شروع ہوجاتاہے ،سب سے آگے ڈاکٹربھائی اس کے پیچھے اے ایم اور پھر مزیدپلئیرز کھڑے ہوتے ہیں۔۔۔ ،دوسری جانب حماد اس کے پیچھے ناٹی میر اور دیگر کھلاڑی مخالف ٹیم کو شکست فاش کے عزم سے میدان سجا دیتے ہیں۔۔
حماد نے چہرے سے ظاہر نہ ہونے دیا کہ اس کی نظریں کھانے اور دل میں اول کباب سے نپٹنے کے بعد حلوے سے دو دو ہاتھ کا منصوبہ بنا چکی ہیں ۔۔۔۔وہ کباب کی لذت اڑانے کے خیال میں تھا کہ اس کے کانوں میں ناٹی میر کی آواز پڑی’’استاد‘ تم نے جتنی بھی دعوتیں میری جیب سے اڑائی ہیں آج انہیں حلال کردو‘‘۔۔۔
حماد صرف کھانے کا ہی پہلوان نہ تھا بلکہ اس کے اندرواقعی بڑی قوت تھی۔۔۔اس کے چہرے پہ چھایا اعتماد ظاہر کرتاتھا کہ وہ اپنی ٹیم سمیت یہ مقابلہ جیتے گے۔۔۔۔ناٹی میر بھی طاقت ورجوان تھا۔۔۔(یہ دنوں ممبرز درسگاہ کے بہترین ممبرز تھے)۔
کھیل شروع ہوگیا۔۔۔زور میں دونوں ٹیمیں وقتی طور پہ برابر جارہی تھیں،۔۔۔۔مقابلہ زبردست ہورہا تھا ۔۔۔۔۔
ایسے لگ رہاتھا جیسے دونوں ٹیموں کے کھلاڑی زمین کے اندر بورنگ کرکے پانی نکال لائے گے
:p

طاقت سے زیادہ کھلاڑیوں کی ہمت کی اہمیت تھی کہ وہ کتنی دیر تک استقامت کا مظاہرہ دیکھاتے ہیں۔۔۔چنانچہ کچھ دیر کی رسہ کشی کے بعد ایسے لگنے لگاکہ حماد کی ٹیم بھاری پڑرہی ہے۔۔۔
ڈاکٹر بھائی ’’اے ایم نے عقب سے آواز لگائی ‘‘بھ۔۔۔ بٹن دباکے۔۔۔ڈاکٹربھائی بھی آہنی چٹان سے کم نہ تھا ۔۔اس لیے بھرپور مست آواز سے بڑھک ماری۔۔۔سمجھ کرلومتھے کنال دے کر ۔۔ ۔۔میں حماد کو تھوڑا امید دلارہاہوں ۔۔۔اب تم پیچھے والوں سے کہو!قوت کا آخری ذرہ لگائیں۔۔۔مخالفین اپنی نفسیاتی جیت کا یقین کرچکے ہیں ۔۔۔

اے ایم کووہ جملہ یاد آیا ۔۔’’ہار نے کے بعدعارف والا کا رخ نہ کرنا‘‘۔۔اے ایم نے سوچا"ابھی ابھی تو شادی ہوئی ہے اس دا مطبل ہارنے کے بعد منجھی ایتھے ہی ڈاھوؤ۔۔۔۔؟ای کدی وی نئیں ہوسکدا۔۔۔۔اس سوچ نے اے ایم کے خون کو اس کے جسم میں ہنڈا ون ٹو فائیو
بنادیاتھا۔۔۔۔
:pagal:

مجمع میں سے ناعمہ وقار نے چیخ کرکہا"میر بھائی!ثابت کردو کہ آپ صرف کھانے کے لیے پیدا نہیں ہوئے۔۔۔

میر نےکہا"پھر سمجھو! ٹوٹ جائے رسہ میر کے ہاتھ سے کیسے چھوٹ جائے۔۔۔۔
اس کا مطلب تھا کہ رسہ ٹوٹے گالیکن میر کے ہاتھوں سے نہیں چھوٹے گا۔۔۔۔
;)
یہ مقابلہ دیکھنے کھجل سائیں بھی آیاہواتھا، اس نے پکار کر ڈاکٹر بھائی سے کہا، دل پکڑکےبالک۔۔۔ رسہ تھام کےبالک۔۔۔۔

لالہ لئیق شاہ کی طرف گل خان نے جملہ اچھالا۔۔۔۔خوچہ ایسے کھینچ کہ بلڈوزر شرماجائے۔۔۔
:pagal:
لالہ لئیق شاہ خاموش تھا جس کی وجہ ایلفی والی قلفی تھی،کھجل سائیں نے انہیں قلفی کے اوپر ایلفی ڈال کر دی تھی تاکہ جہاں وہ کھڑے ہوں لوہے کی طرح جم کر کھڑے رہیں۔۔۔
:pagal:
کاٹ دار جملوں پر مشتمل ملی جلی آوازیں اب بھی کھلاڑیوں کے کانوں میں پڑ رہی تھیں جو انہیں مقابلہ جیتنے کی دھن پر قائم رکھے تھیں ۔۔۔
ڈاکٹربھائی اور ان کے کھلاڑیوں نے جب فیصلہ کن اور طاقت کاآخری ذرہ داؤ پر لگایا تو مقابلہ ایک بار پھر برابری کی سطح تک آپہنچا۔۔۔
عین اس وقت حماد کو کباب،سموسے حلوے ۔۔۔مخالفین کی جھولیوں میں جاتے محسوس ہوئے اور وہ اندر سے کانپ اٹھا۔۔۔اس نے بڑھک ماری’’ہائے۔۔۔۔‘‘کباب"۔۔ لفظ کباب سرگوشی میں بدل گیاتھا،لالہ لئیق شاہ کو کھجل سائیں کی قلفی پر اعتماد تھا اس لیے انہوں نے مذاقاً کہا۔۔۔جانے دو ہم اپنی جیب سے خرید کر کھائیں گے، افضل بھائی نے کہا ،توکیا مقابلہ ہار دیں؟۔
لالہ لئیق شاہ نے کہا،نہیں جب وہ رسہ کھینچتے ہیں تومیری کمر کو بڑا سکھ ملتا ہے، ۔۔۔افضل بھائی نے کہا ،ہمیں جیتنا ہے۔۔۔۔
لالہ لئیق شاہ نے بڑی مسرت اور سرور سے کہا۔۔۔چلو پھر زور لگائیں۔۔۔۔
:D
رسہ بھی کھجل سائیں منڈی کا تھا۔۔عین درمیان سے ٹوٹ گیا۔۔۔ڈاکٹربھائی اور ان کے کھلاڑیوں کی ٹیم مشرق اور حماد اپنے کھلاڑیوں سمیت مغرب کی جانب پیٹھوں کے بل زمین بوس ہوئے۔۔۔

ریفری انکل اردو لور نے سیٹی بجاکر اعلان کرتے ہوئے کہا یہ مقابلہ بغیر کسی نتیجے کے دونوں ٹیمیں کے درمیان برابر برابر ختم کیاجارہاہے۔۔۔

نامنظور نامنظور۔۔۔مقابلہ پھر سے ہوگا،ناعمہ نے میچ فکسنگ پکارتے ہوئے شور کردیا،۔۔تماشبین بھی احتجاج میں شریک ہوگئے۔۔۔

ریفری انکل اردو لور نے کہا؛۔مقابلہ دوبارہ نہیں ہوگا،رسہ ٹوٹنے کا مطلب ہے کہ دونوں ٹیموں کا زور برابر ہے۔

ناعمہ نے کہا؛۔کیا ایسا نہیں ہوسکتا کہ دو "رسے" شامل کردئیے جائیں؟، انکل اردولور نے تجویز رد کرتے ہوئے دلیل دی کہ کھلاڑیوں کے ہاتھوں کی گرفت کمزور پڑے گی۔۔۔۔

لالہ لئیق شاہ بول پڑاکہ ہمارا وقت بہت قیمتی ہے،ہمیں اور رول بھی پلے کرنے ہوتے ہیں۔
:pagal:
ڈاکٹر بھائی اور دیگر کھلاڑی نے بھی ان کی ہاں میں ہاں ملائی

چنانچہ سب نے کھلاڑیوں کے لیے تالیاں بجائیں۔۔۔

بعد میں لالہ لئیق شاہ نے کھجل سائیں سے احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ رسہ کیسے ٹوٹ گیا ؟

کھجل سائیں نے کہا کہ قلفی ڈاکٹر بالک کے علم میں آچکی تھی، مجبوراً اسےبھی ایلفی والی قلفی کھلاناپڑی۔۔رسہ تو ٹوٹناہی تھا :pagal:۔۔۔



@LAIQUE SHAH @Doctor @Syed Waqas @Afzal339 @UrduLover @Abu Dujana @Derwaish @SILENT.WALKER @silentjan @Dr Mechanical @Ahsan376 @Bail Gari @ناعمہ وقار @Ata Rafi @Zain UltimateX @X 2





 

UrduLover

Super Star
Top Poster of a Month
Dynamic Brigade
ITD Express
Designer
Teacher
Writer
Joined
May 9, 2018
Threads
427
Messages
1,725
Likes
1,189
Points
562
Location
Manchester U.K
#3
:pagal::maro::pagal:ارے واہ کیا کہانی تو دلچسپ لکھی ہے۔بس ریفری کچھ کمزور ارادوں اور نا تجربہ کار نکلا۔چلو آہستہ آہستہ تجربہ ہو جائے گا۔​
 

Abu Dujana

Advisor
Designer
Teacher
Writer
Joined
Apr 25, 2018
Threads
49
Messages
584
Likes
542
Points
299
Location
Karachi, Pakistan
#4
ہاہاہاہا۔۔۔۔۔
اتنا کانٹے دار مقابلہ اور وہ بھی ذمہ دار حصہ داروں کے درمیان۔۔۔
واو۔۔۔ مزہ آگیا صرف فریقین کے نام جان کر ہی۔۔۔
:)
ریفری انکل کی بھی کیا کہنے۔۔۔ اگر ایکس ٹو کی تیز طرار آنکھوں نے ریفری انکل کو بھانپ ہی لیا تھا تو اس کا مطلب ہے کہ۔۔۔ دال میں کچھ کالا تھا۔۔۔۔۔
:pagal:
تماش بین اور ان کے نعرے بھی بڑے حوصلہ افزائی دیتے معلوم ہوئے۔۔۔ عارف والا کی دھمکی ہو یا ناعمہ وقار کی ریفری انکل کو میچ فکسنگ کا طعنہ اور ڈبل رسی جیسے تجاویز ہو۔۔۔۔
حماد پاجی کےناٹی میر کےجیب سے کھائے گئے کھانوں کو حلال کرناہو یا پھر رسی کے سرے پہ بندھے نئے کھانوں پہ عقابی نظر۔۔
کھجل سائیں اور گل خان کے اپنے ٹیموں سے ہمدردی یا پھر ایک دوسرے سے کولڈ انتقام۔۔۔۔
اور فریقین کے "فرد اول" کی ایلفی ملی قلفی کا ٹوٹکا ہویا پھر اپنے ٹیم پر کم بوجھ ڈالنے کے ساتھ جیتنے کی یقینی امید۔۔۔
ان تمام چیزوں نے اس کانٹے دار مقابلے کو بہت حسین اور دلچسپ بنالیا ہے۔۔۔
اور پھر رہی سہی کسر۔۔۔لکھنے والےنے سسپنس پیدا کرتے ہوئے۔۔۔اخر میں سارا ملبہ رسی پر ڈالتے ہوئے۔۔۔جانبین کی "عزت" بچانے کی کوشش کی ہے۔۔۔۔
ویسے خاموش رگڑے میں کھجل سائیں بھی آئے ہیں کہ رسی اور ایلفی ملی قلفی ان کی طرف منسوب ہے۔۔۔
:pagal::pagal::pagal:
کیا کہنے صبیح بھائی۔۔۔
پڑھتے پڑھتے سانس رکی ہوئی تھی کہ صبیح بھائی کا قلم کیا رخ اختیار کر تا ہے۔۔۔مگر رسی کے دو ٹکڑے ہونے سے جان میں جان آئی اور مخالف فریق کے نہ جیتنے کی اتنی خوشی ہوئی کہ یہ بھی یاد نہ رہا۔۔۔کہ جیتنے کی صورت میں ملنے والے انعام کی مد میں کھانا نہ جیتنے کی صورت میں آدھا تو حق بنتا تھا۔۔۔
جو کہ بالکل ہی غائب ہو گیا۔۔
:geek:
 

Abu Dujana

Advisor
Designer
Teacher
Writer
Joined
Apr 25, 2018
Threads
49
Messages
584
Likes
542
Points
299
Location
Karachi, Pakistan
#5
:pagal::maro::pagal:ارے واہ کیا کہانی تو دلچسپ لکھی ہے۔بس ریفری کچھ کمزور ارادوں اور نا تجربہ کار نکلا۔چلو آہستہ آہستہ تجربہ ہو جائے گا۔​
نہیں انکل ریفری بڑاتجربہ کار تھا۔۔۔ ورنہ اتنے مضبوط فریقین کے درمیان ریفری کھبی نہ بنتا۔۔۔
:D:p:cool::D
 

Doctor

Team Leader
Most Valuable
Most Popular
Top Poster
Top Poster of a Month
Dynamic Brigade
Developer
Expert
Teacher
Writer
Joined
Apr 25, 2018
Threads
265
Messages
1,882
Likes
2,322
Points
830
Location
Rawalpindi
#6

ہاہاہاہا
زبردست مقابلہ ایک بار پھر سیاسی اختتام

بہت خوب​
 

Abu Dujana

Advisor
Designer
Teacher
Writer
Joined
Apr 25, 2018
Threads
49
Messages
584
Likes
542
Points
299
Location
Karachi, Pakistan
#7

ہاہاہاہا
زبردست مقابلہ ایک بار پھر سیاسی اختتام

بہت خوب​
جی بالکل۔ واقعی سیاسی اختتام رہا۔۔۔
اور ایسا اپنے دفاع میں کیا گیا۔۔۔
:cool::cool::p
 

Sabih Tariq

Super Moderator
Dynamic Brigade
Teacher
Writer
Joined
May 5, 2018
Threads
25
Messages
837
Likes
1,449
Points
392
Location
Central
#9
:pagal::maro::pagal:ارے واہ کیا کہانی تو دلچسپ لکھی ہے۔بس ریفری کچھ کمزور ارادوں اور نا تجربہ کار نکلا۔چلو آہستہ آہستہ تجربہ ہو جائے گا۔​
:pagal:
نہیں جی ریفری انکل نے موقع کے مطابق کمپرومائز کیا۔
پسند اور رائے کا شکریہ ،امید ہے آپ نے کہانی کو انجوائے کیا ہوگا۔
:D
یہ صرف ایک مزاحیہ سی تحریر ہے،آپ کے کرادر نے کہانی میں جان ڈال دی۔
 

Sabih Tariq

Super Moderator
Dynamic Brigade
Teacher
Writer
Joined
May 5, 2018
Threads
25
Messages
837
Likes
1,449
Points
392
Location
Central
#10

ہاہاہاہا
زبردست مقابلہ ایک بار پھر سیاسی اختتام

بہت خوب​
:p
ایسا تو کرناہی تھا، رسی نہ ٹوٹتی تو کسی ایک ٹیم نے لازمی جیتنا تھا،البتہ ناعمہ سسٹر بھی کچھ ایسا ہی کہیں گی۔
:pagal:
 

Sabih Tariq

Super Moderator
Dynamic Brigade
Teacher
Writer
Joined
May 5, 2018
Threads
25
Messages
837
Likes
1,449
Points
392
Location
Central
#11
جی بالکل۔ واقعی سیاسی اختتام رہا۔۔۔
اور ایسا اپنے دفاع میں کیا گیا۔۔۔
:cool::cool::p
درسگاہ کے ممبران سبھی دوست یار بیلی ہیں، اس لیے رسے نے سمجھداری کا مظاہرہ کرتے ہوئے خود کو ہی توڑ ڈالا۔۔۔۔۔۔
:pagal:
 

Sabih Tariq

Super Moderator
Dynamic Brigade
Teacher
Writer
Joined
May 5, 2018
Threads
25
Messages
837
Likes
1,449
Points
392
Location
Central
#12
ہاہاہاہا۔۔۔۔۔
اتنا کانٹے دار مقابلہ اور وہ بھی ذمہ دار حصہ داروں کے درمیان۔۔۔
واو۔۔۔ مزہ آگیا صرف فریقین کے نام جان کر ہی۔۔۔
:)
ریفری انکل کی بھی کیا کہنے۔۔۔ اگر ایکس ٹو کی تیز طرار آنکھوں نے ریفری انکل کو بھانپ ہی لیا تھا تو اس کا مطلب ہے کہ۔۔۔ دال میں کچھ کالا تھا۔۔۔۔۔
:pagal:
تماش بین اور ان کے نعرے بھی بڑے حوصلہ افزائی دیتے معلوم ہوئے۔۔۔ عارف والا کی دھمکی ہو یا ناعمہ وقار کی ریفری انکل کو میچ فکسنگ کا طعنہ اور ڈبل رسی جیسے تجاویز ہو۔۔۔۔
حماد پاجی کےناٹی میر کےجیب سے کھائے گئے کھانوں کو حلال کرناہو یا پھر رسی کے سرے پہ بندھے نئے کھانوں پہ عقابی نظر۔۔
کھجل سائیں اور گل خان کے اپنے ٹیموں سے ہمدردی یا پھر ایک دوسرے سے کولڈ انتقام۔۔۔۔
اور فریقین کے "فرد اول" کی ایلفی ملی قلفی کا ٹوٹکا ہویا پھر اپنے ٹیم پر کم بوجھ ڈالنے کے ساتھ جیتنے کی یقینی امید۔۔۔
ان تمام چیزوں نے اس کانٹے دار مقابلے کو بہت حسین اور دلچسپ بنالیا ہے۔۔۔
اور پھر رہی سہی کسر۔۔۔لکھنے والےنے سسپنس پیدا کرتے ہوئے۔۔۔اخر میں سارا ملبہ رسی پر ڈالتے ہوئے۔۔۔جانبین کی "عزت" بچانے کی کوشش کی ہے۔۔۔۔
ویسے خاموش رگڑے میں کھجل سائیں بھی آئے ہیں کہ رسی اور ایلفی ملی قلفی ان کی طرف منسوب ہے۔۔۔
:pagal::pagal::pagal:
کیا کہنے صبیح بھائی۔۔۔
پڑھتے پڑھتے سانس رکی ہوئی تھی کہ صبیح بھائی کا قلم کیا رخ اختیار کر تا ہے۔۔۔مگر رسی کے دو ٹکڑے ہونے سے جان میں جان آئی اور مخالف فریق کے نہ جیتنے کی اتنی خوشی ہوئی کہ یہ بھی یاد نہ رہا۔۔۔کہ جیتنے کی صورت میں ملنے والے انعام کی مد میں کھانا نہ جیتنے کی صورت میں آدھا تو حق بنتا تھا۔۔۔
جو کہ بالکل ہی غائب ہو گیا۔۔
:geek:
(y):D
ماشاء اللہ آپ کا تجزیہ اور کمنٹ کہانی سے زیادہ عمدہ ۔۔۔،پڑھ کر انجوائے کیا، امید ہے کہ آپ بھی اسی طرح کی کہانی لکھیں گے کیونکہ اس قسم کے کمنٹس سے ہی کہانی بھی بن سکتی ہے۔۔۔۔

کھانے کی تفصیل شامل نہیں ہے، البتہ اصل چیز فن تھا جو شروع سے آخر تک کوشش کی ہے کہ قائم رہے،رسہ ٹوٹنے اور ریفری انکل کے اعلان کے بعد مقابلہ برابر برابر رہا۔۔۔ظاہری بات ہے اس کے بعد کھانا بھی سب نے مل کرکھایا۔۔۔۔چوہدری الیاس سپانسر تھا جو کہانی میں لکھاہے اور رسے سے باندھے گئے کھانے کے علاوہ مزید اچھے اچھے پکوان تیار ہورہے تھے۔

کہانی پڑھنے اور رائے کا شکریہ شاہ جی، زبردست انداز میں آپ نے حوصلہ افزائی کی ۔
(y):)
 

Sabih Tariq

Super Moderator
Dynamic Brigade
Teacher
Writer
Joined
May 5, 2018
Threads
25
Messages
837
Likes
1,449
Points
392
Location
Central
#13

ہاہاہاہا
زبردست مقابلہ ایک بار پھر سیاسی اختتام

بہت خوب​
لالہ لئیق شاہ بول پڑاکہ ہمارا وقت بہت قیمتی ہے،ہمیں اور رول بھی پلے کرنے ہوتے ہیں
@LAIQUE SHAH
آپ حضرات ستارے ہو،جس کہانی میں شامل ہوکر رول پلے کرتے ہیں ،وہ کہانی ہٹ ہوجاتی ہے۔
;):p:D(y)
ایکسٹو بھی مستقبل کے ابھرتے ہوئے ستارے ہیں۔
گذارش ہے کہ اپنا معاوضہ نہ بڑھالینا
;):pagal:
 

ناعمہ وقار

Super Star
Contest Winner
Dynamic Brigade
Joined
May 8, 2018
Threads
12
Messages
636
Likes
772
Points
272
Location
Islamabad
#15

ایک طرف لالہ لئیق شاہ،افضل بھائی ،ناٹی میر ،حماد ،درویش اور دوسری جانب ڈاکٹر بھائی، ایکسٹو، ابودجانہ ،عمر اسلام ،اے ایم آمنے سامنے تھے

دیکھو ذرا کیسے سب ساتھیوں کو ایک دوسرے کے مدمقابل لا کھڑا کیا۔۔۔۔سارے فساد کی جڑ آپ ہی ہیں

یہ ایک دعوت تھی لیکن کھیل بہانہ تھا
;)
یہ دعوت نہیں ساز ش تھی
:maro:

ایکسٹو کی نگاہیں:mad: ریفری انکل پر لگیں ہوئیں تھیں اس کو شک ہواکہ میچ فکسنگ ہوسکتی ہے ،لہذا ایکسٹو نے اپنی عادت کے
مطابق یہاں بھی جاسوسی شروع کردی۔۔۔۔

یعنی دونوں ٹیموں کو ہی میچ فکسنگ کا شک تھا، بس غلطی یہ ہوئی کہ ایک دوسرے پہ شک تھا، جبکہ گڑبڑ صبیح بھائی نے کی تھی
:hathora:

ریفری انکل اردو لور نے کہا، رولز یہ ہیں کہ اگر تھک جائیں تو مقابلہ روک دیاجائے گا،پیاس لگے گی تو وقفہ ہوگا،اگر کسی کھلاڑی کو دورانِ مقابلہ تیل کی مالش مولش کرنی ہے تو وہ مجھے بتائے گاتاکہ کھیل روک کر اسے مالش مولش کا موقع دیاجائے۔۔۔
:pagal:

حماد نے چہرے سے ظاہر نہ ہونے دیا کہ اس کی نظریں کھانے اور دل میں اول کباب سے نپٹنے کے بعد حلوے سے دو دو ہاتھ کا منصوبہ بنا چکی ہیں ۔۔۔۔وہ کباب کی لذت اڑانے کے خیال میں تھا کہ اس کے کانوں میں ناٹی میر کی آواز پڑی’’استاد‘ تم نے جتنی بھی دعوتیں میری جیب سے اڑائی ہیں آج انہیں حلال کردو‘‘۔۔۔

لہہ دس، میر پا جی اور کسی کو دعوت دیں، کیسا سفید جھوٹ لکھ دیا
:D

ایسے لگ رہاتھا جیسے دونوں ٹیموں کے کھلاڑی زمین کے اندر بورنگ کرکے پانی نکال لائے گے
آئندہ جہاں بورنگ کروانی ہوگی ، ان ٹیموں کا مقابلہ کروا دیا کریں گے، چھوٹی سی دعوت کر دیں گے، سستی بورنگ ہو جائے گی
:pagal:


مجمع میں سے ناعمہ وقار نے چیخ کرکہا"میر بھائی!ثابت کردو کہ آپ صرف کھانے کے لیے پیدا نہیں ہوئے۔۔۔
یہاں میرا کوئی کام تھا ہی نہیں ، زبردستی کی انٹری کروائی گئی ہے
:maro:

میر نےکہا"پھر سمجھو! ٹوٹ جائے رسہ میر کے ہاتھ سے کیسے چھوٹ جائے۔۔۔۔
اس کا مطلب تھا کہ رسہ ٹوٹے گالیکن میر کے ہاتھوں سے نہیں چھوٹے گا۔۔۔۔

;)
میر بھائی ان میں سے نہیں جو ایسی چھوٹی موٹی باتوں سے جوش میں آجائیں
:pagal:

لالہ لئیق شاہ خاموش تھا جس کی وجہ ایلفی والی قلفی تھی،کھجل سائیں نے انہیں قلفی کے اوپر ایلفی ڈال کر دی تھی تاکہ جہاں وہ کھڑے ہوں لوہے کی طرح جم کر کھڑے رہیں۔۔۔

:pagal:
یہ بات ذرا وضاحت طلب ہے کہ قلفی اگر کھا لی تھی تو اس سے صرف منہ بند رہتا، جبکہ کہانی میں لالہ کئی جگہوں پہ بولتے نظر آئے ہیں ، پھر جم کر کھڑے ہونے کا کیا تعلق ہے،
کیا قلفی کھائی نہیں تھی یا گرمی سے پگھل کر گر گئی تھی اور لالہ اس پر کھڑے ہو گئے تھے ؟؟
:rolleyes::rolleyes::unsure::unsure::unsure:

رسہ بھی کھجل سائیں منڈی کا تھا۔۔عین درمیان سے ٹوٹ گیا۔۔۔ڈاکٹربھائی اور ان کے کھلاڑیوں کی ٹیم مشرق اور حماد اپنے کھلاڑیوں سمیت مغرب کی جانب پیٹھوں کے بل زمین بوس ہوئے۔۔۔

مجھے اب یقین ہو گیا کہ کھجل سائیں اصل میں صبیح بھائی کا ہی بہروپ ہے
:hathora:

نامنظور نامنظور۔۔۔مقابلہ پھر سے ہوگا،ناعمہ نے میچ فکسنگ پکارتے ہوئے شور کردیا،۔۔تماشبین بھی احتجاج میں شریک ہوگئے۔۔۔

ایسا لگ رہا ہے کہ میچ دیکھنے آئی ٹی درسگاہ سے صرف ناعمہ ہی آئی تھی، یا پھر وہ ٹیم جو کھیل رہی تھی
:pagal:
ریفری انکل اردو لور نے کہا؛۔مقابلہ دوبارہ نہیں ہوگا،رسہ ٹوٹنے کا مطلب ہے کہ دونوں ٹیموں کا زور برابر ہے۔

ناعمہ نے کہا؛۔کیا ایسا نہیں ہوسکتا کہ دو "رسے" شامل کردئیے جائیں؟، انکل اردولور نے تجویز رد کرتے ہوئے دلیل دی کہ کھلاڑیوں کے ہاتھوں کی گرفت کمزور پڑے گی۔۔۔۔


سب کی سب سازش تھی، اور ایسے تھی کی ریفری انکل کو بھی معلوم نہ ہو سکی، ورنہ وہ کبھی ہماری بات رد نہیں کرتے
:rolleyes:

بعد میں لالہ لئیق شاہ نے کھجل سائیں سے احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ رسہ کیسے ٹوٹ گیا ؟

کھجل سائیں نے کہا کہ قلفی ڈاکٹر بالک کے علم میں آچکی تھی، مجبوراً اسےبھی ایلفی والی قلفی کھلاناپڑی۔۔رسہ تو ٹوٹناہی تھا :pagal:۔۔۔


دیکھا ، کیسے اینڈ میں پھر سے سیاست کا داؤ لگا دیا

:maro:
 

ناعمہ وقار

Super Star
Contest Winner
Dynamic Brigade
Joined
May 8, 2018
Threads
12
Messages
636
Likes
772
Points
272
Location
Islamabad
#16
بہت ہی زبردست، واقعی مزہ آگیا کہانی پڑھ کر
:cool::cool:
یہ صلاحیت بہت ہی کم لوگوں میں ہوتی ہے کہ وہ جسے چاہیں رگڑا لگا سکتے ہیں ، اور اللہ نے آپ میں تو یہ صلاحیت کوٹ کوٹ کے بھر دی ہے، ہم آپکے حق میں مزید اس صلاحیت کی دعا کرنے ہی والے تھے کہ آپنے ہمیں بھی اسی چکی میں پیس دیا
اب دعا کینسل
:maro: :hathora:
 

AM

Super Moderator
Expert
Teacher
Writer
Joined
May 6, 2018
Threads
9
Messages
122
Likes
254
Points
183
Location
Arifwala
#17
ہا ہا ہا ، اور اس طرح لائق شاہ، ڈاکٹر بھائی اور دیگر کھاڑیوں کے مابین رسہ کشی کا سنسنی خیز مقابلہ بابا کھجل سائیں المعروف کفن چور نے بلامقابلہ جیت لیا :D ۔
 

X 2

Super Star
Dynamic Brigade
Expert
Writer
Joined
Apr 25, 2018
Threads
100
Messages
641
Likes
1,676
Points
477
#18

ایک طرف لالہ لئیق شاہ،افضل بھائی ،ناٹی میر ،حماد ،درویش اور دوسری جانب ڈاکٹر بھائی، ایکسٹو، ابودجانہ ،عمر اسلام ،اے ایم آمنے سامنے تھے
دیکھو ذرا کیسے سب ساتھیوں کو ایک دوسرے کے مدمقابل لا کھڑا کیا۔۔۔۔سارے فساد کی جڑ آپ ہی ہیں

یہ ایک دعوت تھی لیکن کھیل بہانہ تھا
;)
یہ دعوت نہیں ساز ش تھی
:maro:

ایکسٹو کی نگاہیں:mad: ریفری انکل پر لگیں ہوئیں تھیں اس کو شک ہواکہ میچ فکسنگ ہوسکتی ہے ،لہذا ایکسٹو نے اپنی عادت کے
مطابق یہاں بھی جاسوسی شروع کردی۔۔۔۔

یعنی دونوں ٹیموں کو ہی میچ فکسنگ کا شک تھا، بس غلطی یہ ہوئی کہ ایک دوسرے پہ شک تھا، جبکہ گڑبڑ صبیح بھائی نے کی تھی
:hathora:

ریفری انکل اردو لور نے کہا، رولز یہ ہیں کہ اگر تھک جائیں تو مقابلہ روک دیاجائے گا،پیاس لگے گی تو وقفہ ہوگا،اگر کسی کھلاڑی کو دورانِ مقابلہ تیل کی مالش مولش کرنی ہے تو وہ مجھے بتائے گاتاکہ کھیل روک کر اسے مالش مولش کا موقع دیاجائے۔۔۔
:pagal:


حماد نے چہرے سے ظاہر نہ ہونے دیا کہ اس کی نظریں کھانے اور دل میں اول کباب سے نپٹنے کے بعد حلوے سے دو دو ہاتھ کا منصوبہ بنا چکی ہیں ۔۔۔۔وہ کباب کی لذت اڑانے کے خیال میں تھا کہ اس کے کانوں میں ناٹی میر کی آواز پڑی’’استاد‘ تم نے جتنی بھی دعوتیں میری جیب سے اڑائی ہیں آج انہیں حلال کردو‘‘۔۔۔
لہہ دس، میر پا جی اور کسی کو دعوت دیں، کیسا سفید جھوٹ لکھ دیا
:D

ایسے لگ رہاتھا جیسے دونوں ٹیموں کے کھلاڑی زمین کے اندر بورنگ کرکے پانی نکال لائے گے
آئندہ جہاں بورنگ کروانی ہوگی ، ان ٹیموں کا مقابلہ کروا دیا کریں گے، چھوٹی سی دعوت کر دیں گے، سستی بورنگ ہو جائے گی
:pagal:


مجمع میں سے ناعمہ وقار نے چیخ کرکہا"میر بھائی!ثابت کردو کہ آپ صرف کھانے کے لیے پیدا نہیں ہوئے۔۔۔
یہاں میرا کوئی کام تھا ہی نہیں ، زبردستی کی انٹری کروائی گئی ہے
:maro:

میر نےکہا"پھر سمجھو! ٹوٹ جائے رسہ میر کے ہاتھ سے کیسے چھوٹ جائے۔۔۔۔
اس کا مطلب تھا کہ رسہ ٹوٹے گالیکن میر کے ہاتھوں سے نہیں چھوٹے گا۔۔۔۔

;)
میر بھائی ان میں سے نہیں جو ایسی چھوٹی موٹی باتوں سے جوش میں آجائیں
:pagal:

لالہ لئیق شاہ خاموش تھا جس کی وجہ ایلفی والی قلفی تھی،کھجل سائیں نے انہیں قلفی کے اوپر ایلفی ڈال کر دی تھی تاکہ جہاں وہ کھڑے ہوں لوہے کی طرح جم کر کھڑے رہیں۔۔۔
:pagal:
یہ بات ذرا وضاحت طلب ہے کہ قلفی اگر کھا لی تھی تو اس سے صرف منہ بند رہتا، جبکہ کہانی میں لالہ کئی جگہوں پہ بولتے نظر آئے ہیں ، پھر جم کر کھڑے ہونے کا کیا تعلق ہے،
کیا قلفی کھائی نہیں تھی یا گرمی سے پگھل کر گر گئی تھی اور لالہ اس پر کھڑے ہو گئے تھے ؟؟
:rolleyes::rolleyes::unsure::unsure::unsure:

رسہ بھی کھجل سائیں منڈی کا تھا۔۔عین درمیان سے ٹوٹ گیا۔۔۔ڈاکٹربھائی اور ان کے کھلاڑیوں کی ٹیم مشرق اور حماد اپنے کھلاڑیوں سمیت مغرب کی جانب پیٹھوں کے بل زمین بوس ہوئے۔۔۔
مجھے اب یقین ہو گیا کہ کھجل سائیں اصل میں صبیح بھائی کا ہی بہروپ ہے
:hathora:

نامنظور نامنظور۔۔۔مقابلہ پھر سے ہوگا،ناعمہ نے میچ فکسنگ پکارتے ہوئے شور کردیا،۔۔تماشبین بھی احتجاج میں شریک ہوگئے۔۔۔
ایسا لگ رہا ہے کہ میچ دیکھنے آئی ٹی درسگاہ سے صرف ناعمہ ہی آئی تھی، یا پھر وہ ٹیم جو کھیل رہی تھی
:pagal:
ریفری انکل اردو لور نے کہا؛۔مقابلہ دوبارہ نہیں ہوگا،رسہ ٹوٹنے کا مطلب ہے کہ دونوں ٹیموں کا زور برابر ہے۔

ناعمہ نے کہا؛۔کیا ایسا نہیں ہوسکتا کہ دو "رسے" شامل کردئیے جائیں؟، انکل اردولور نے تجویز رد کرتے ہوئے دلیل دی کہ کھلاڑیوں کے ہاتھوں کی گرفت کمزور پڑے گی۔۔۔۔

سب کی سب سازش تھی، اور ایسے تھی کی ریفری انکل کو بھی معلوم نہ ہو سکی، ورنہ وہ کبھی ہماری بات رد نہیں کرتے
:rolleyes:

بعد میں لالہ لئیق شاہ نے کھجل سائیں سے احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ رسہ کیسے ٹوٹ گیا ؟

کھجل سائیں نے کہا کہ قلفی ڈاکٹر بالک کے علم میں آچکی تھی، مجبوراً اسےبھی ایلفی والی قلفی کھلاناپڑی۔۔رسہ تو ٹوٹناہی تھا :pagal:۔۔۔

دیکھا ، کیسے اینڈ میں پھر سے سیاست کا داؤ لگا دیا

:maro:
(y)(y)(y)(y)(y)(y)(y)(y)(y)(y)(y)
(y)(y)(y)(y)(y)(y)(y)(y)
(y)(y)(y)(y)
(y)(y)
(y)
 

Abu Dujana

Advisor
Designer
Teacher
Writer
Joined
Apr 25, 2018
Threads
49
Messages
584
Likes
542
Points
299
Location
Karachi, Pakistan
#19

ایک طرف لالہ لئیق شاہ،افضل بھائی ،ناٹی میر ،حماد ،درویش اور دوسری جانب ڈاکٹر بھائی، ایکسٹو، ابودجانہ ،عمر اسلام ،اے ایم آمنے سامنے تھے
دیکھو ذرا کیسے سب ساتھیوں کو ایک دوسرے کے مدمقابل لا کھڑا کیا۔۔۔۔سارے فساد کی جڑ آپ ہی ہیں

یہ ایک دعوت تھی لیکن کھیل بہانہ تھا
;)
یہ دعوت نہیں ساز ش تھی
:maro:

ایکسٹو کی نگاہیں:mad: ریفری انکل پر لگیں ہوئیں تھیں اس کو شک ہواکہ میچ فکسنگ ہوسکتی ہے ،لہذا ایکسٹو نے اپنی عادت کے
مطابق یہاں بھی جاسوسی شروع کردی۔۔۔۔

یعنی دونوں ٹیموں کو ہی میچ فکسنگ کا شک تھا، بس غلطی یہ ہوئی کہ ایک دوسرے پہ شک تھا، جبکہ گڑبڑ صبیح بھائی نے کی تھی
:hathora:

ریفری انکل اردو لور نے کہا، رولز یہ ہیں کہ اگر تھک جائیں تو مقابلہ روک دیاجائے گا،پیاس لگے گی تو وقفہ ہوگا،اگر کسی کھلاڑی کو دورانِ مقابلہ تیل کی مالش مولش کرنی ہے تو وہ مجھے بتائے گاتاکہ کھیل روک کر اسے مالش مولش کا موقع دیاجائے۔۔۔
:pagal:


حماد نے چہرے سے ظاہر نہ ہونے دیا کہ اس کی نظریں کھانے اور دل میں اول کباب سے نپٹنے کے بعد حلوے سے دو دو ہاتھ کا منصوبہ بنا چکی ہیں ۔۔۔۔وہ کباب کی لذت اڑانے کے خیال میں تھا کہ اس کے کانوں میں ناٹی میر کی آواز پڑی’’استاد‘ تم نے جتنی بھی دعوتیں میری جیب سے اڑائی ہیں آج انہیں حلال کردو‘‘۔۔۔
لہہ دس، میر پا جی اور کسی کو دعوت دیں، کیسا سفید جھوٹ لکھ دیا
:D

ایسے لگ رہاتھا جیسے دونوں ٹیموں کے کھلاڑی زمین کے اندر بورنگ کرکے پانی نکال لائے گے
آئندہ جہاں بورنگ کروانی ہوگی ، ان ٹیموں کا مقابلہ کروا دیا کریں گے، چھوٹی سی دعوت کر دیں گے، سستی بورنگ ہو جائے گی
:pagal:


مجمع میں سے ناعمہ وقار نے چیخ کرکہا"میر بھائی!ثابت کردو کہ آپ صرف کھانے کے لیے پیدا نہیں ہوئے۔۔۔
یہاں میرا کوئی کام تھا ہی نہیں ، زبردستی کی انٹری کروائی گئی ہے
:maro:

میر نےکہا"پھر سمجھو! ٹوٹ جائے رسہ میر کے ہاتھ سے کیسے چھوٹ جائے۔۔۔۔
اس کا مطلب تھا کہ رسہ ٹوٹے گالیکن میر کے ہاتھوں سے نہیں چھوٹے گا۔۔۔۔

;)
میر بھائی ان میں سے نہیں جو ایسی چھوٹی موٹی باتوں سے جوش میں آجائیں
:pagal:

لالہ لئیق شاہ خاموش تھا جس کی وجہ ایلفی والی قلفی تھی،کھجل سائیں نے انہیں قلفی کے اوپر ایلفی ڈال کر دی تھی تاکہ جہاں وہ کھڑے ہوں لوہے کی طرح جم کر کھڑے رہیں۔۔۔
:pagal:
یہ بات ذرا وضاحت طلب ہے کہ قلفی اگر کھا لی تھی تو اس سے صرف منہ بند رہتا، جبکہ کہانی میں لالہ کئی جگہوں پہ بولتے نظر آئے ہیں ، پھر جم کر کھڑے ہونے کا کیا تعلق ہے،
کیا قلفی کھائی نہیں تھی یا گرمی سے پگھل کر گر گئی تھی اور لالہ اس پر کھڑے ہو گئے تھے ؟؟
:rolleyes::rolleyes::unsure::unsure::unsure:

رسہ بھی کھجل سائیں منڈی کا تھا۔۔عین درمیان سے ٹوٹ گیا۔۔۔ڈاکٹربھائی اور ان کے کھلاڑیوں کی ٹیم مشرق اور حماد اپنے کھلاڑیوں سمیت مغرب کی جانب پیٹھوں کے بل زمین بوس ہوئے۔۔۔
مجھے اب یقین ہو گیا کہ کھجل سائیں اصل میں صبیح بھائی کا ہی بہروپ ہے
:hathora:

نامنظور نامنظور۔۔۔مقابلہ پھر سے ہوگا،ناعمہ نے میچ فکسنگ پکارتے ہوئے شور کردیا،۔۔تماشبین بھی احتجاج میں شریک ہوگئے۔۔۔
ایسا لگ رہا ہے کہ میچ دیکھنے آئی ٹی درسگاہ سے صرف ناعمہ ہی آئی تھی، یا پھر وہ ٹیم جو کھیل رہی تھی
:pagal:
ریفری انکل اردو لور نے کہا؛۔مقابلہ دوبارہ نہیں ہوگا،رسہ ٹوٹنے کا مطلب ہے کہ دونوں ٹیموں کا زور برابر ہے۔

ناعمہ نے کہا؛۔کیا ایسا نہیں ہوسکتا کہ دو "رسے" شامل کردئیے جائیں؟، انکل اردولور نے تجویز رد کرتے ہوئے دلیل دی کہ کھلاڑیوں کے ہاتھوں کی گرفت کمزور پڑے گی۔۔۔۔

سب کی سب سازش تھی، اور ایسے تھی کی ریفری انکل کو بھی معلوم نہ ہو سکی، ورنہ وہ کبھی ہماری بات رد نہیں کرتے
:rolleyes:

بعد میں لالہ لئیق شاہ نے کھجل سائیں سے احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ رسہ کیسے ٹوٹ گیا ؟

کھجل سائیں نے کہا کہ قلفی ڈاکٹر بالک کے علم میں آچکی تھی، مجبوراً اسےبھی ایلفی والی قلفی کھلاناپڑی۔۔رسہ تو ٹوٹناہی تھا :pagal:۔۔۔

دیکھا ، کیسے اینڈ میں پھر سے سیاست کا داؤ لگا دیا

:maro:
ہاہاہا۔۔
سطر سطر۔۔ تسلی بخش۔۔ تبصرہ۔۔۔
۔
ویری گُڈ۔۔۔
آپ بھی لکھیں۔۔ کوئی ایسی کہانی۔۔۔ تجزیہ بہت اچھا ہے آپ کا۔۔
۔
:)
اس طرح۔۔ صبیح بھائی کو۔۔۔۔"جواب" دینے والوں میں ایک رائٹر کا اضافہ بھی ہوجائے گا۔۔
:)
 

Abu Dujana

Advisor
Designer
Teacher
Writer
Joined
Apr 25, 2018
Threads
49
Messages
584
Likes
542
Points
299
Location
Karachi, Pakistan
#20
(y):D
ماشاء اللہ آپ کا تجزیہ اور کمنٹ کہانی سے زیادہ عمدہ ۔۔۔،پڑھ کر انجوائے کیا، امید ہے کہ آپ بھی اسی طرح کی کہانی لکھیں گے کیونکہ اس قسم کے کمنٹس سے ہی کہانی بھی بن سکتی ہے۔۔۔۔

کھانے کی تفصیل شامل نہیں ہے، البتہ اصل چیز فن تھا جو شروع سے آخر تک کوشش کی ہے کہ قائم رہے،رسہ ٹوٹنے اور ریفری انکل کے اعلان کے بعد مقابلہ برابر برابر رہا۔۔۔ظاہری بات ہے اس کے بعد کھانا بھی سب نے مل کرکھایا۔۔۔۔چوہدری الیاس سپانسر تھا جو کہانی میں لکھاہے اور رسے سے باندھے گئے کھانے کے علاوہ مزید اچھے اچھے پکوان تیار ہورہے تھے۔

کہانی پڑھنے اور رائے کا شکریہ شاہ جی، زبردست انداز میں آپ نے حوصلہ افزائی کی ۔
(y):)
چلیں۔۔"کھانے کے حوالے سے " اپڈیٹ کرنے کا شکریہ۔۔
پاجی۔۔ ہم بھی کوشش کریں گے۔۔ مگر۔۔ آرام آرام سے۔۔ پہلے آپ جیسے حضرات سے کچھ۔۔"داو پیچ" سیکھ لیں۔۔پھر۔۔
۔
:)
 
Top