ایکسٹو کا اغوا

Sabih Tariq

 
Super Moderator
Dynamic Brigade
Teacher
Writer
Joined
May 5, 2018
Messages
833
Likes
1,446
Points
452
Location
Central
#1
اس کہانی کو سمجھنے کے لیے اس لنک کا وزٹ کیجئے
ڈاکٹر بھائی نے شیر مارا قسط 1

صبیح کی ڈیوٹی میں ڈاکٹر بھائی اور ان کی ٹیم کی نگرانی شامل تھی، اس کاکام دور دور رہ کر نگرانی کرنا،اوراگرکسی خطرے میں پھنس جائیں تو انہیں باحفاظت جنگل میں سے نکالنا ،ان کے کپڑے گندے ہوجائیں تو انہیں نیا لباس فراہم کرنا، خواہ لباس جنگلوں کے پتوں سے تیار کیاجاتا یا جانوروں کو شکار کرکے ان کی کھال ہوتی انہیں مہیا کرنا اس کی ذمہ داری تھی،۔
چنانچہ جب پہلی ہی رات شیروں نے ڈاکٹر بھائی اور ان کی ٹیم کے کیمپ پر حملہ کیاتو ایکسٹوکا لباس خراب ہوگیا،ڈاکٹر بھائی نے صبیح کو موبائل فون پر میسیج کیاکہ انہیں ایک لباس مہیا کردو۔
اس ایمرجنسی آرڈر پرصبیح،ایکسٹو کی پریشانی کو خود ان سے بھی زیادہ اچھی طرح سمجھ کر فوراً تندوے کی تیزی سے حرکت میں آیا اور اس نےتیر کمان بہت سارے تیر برسائے جہاں لومڑیاں! ڈنر کا پروگرام بنائے ڈاکٹر بھائی اور ان کی ٹیم کے متعلق ضیافت کے لیے جنگل کے دوردراز سے اپنے دوستوں کو اکھٹا کرکے حملے کا پروگرام بنارہی تھیں۔
صبیح کے تیروں سے لومڑیاں چند لاشیں چھوڑ کر بھاگ گئیں،چنانچہ صبیح کی اس کاروائی سے اس نے اپنے ساتھیوں پر متوقع حملہ ناکام بنادیا۔

پھر اس نے لومڑیوں کی کھالوں سے گاؤن بناکر ایکسٹو کے ناپ کے تیار کیا اور ڈاکٹر بھائی کی ہدایت پر جنگل کےبتائے پتے پر لا کر رکھ دیا اور پیچھے ہٹ کر ان کی نگرانی کرنے لگا۔۔۔۔
اسی اثنا میں دوسری ٹیم وہاں سے لاپتہ ہوگئی ۔۔۔غالب امکان یہ تھا کہ وہ بھاگ چکے ہیں،صبیح سوچ رہاتھا کہ ڈاکٹر بھائی اور ایکسٹو کا خیال رکھے یا لاپتہ ٹیم کے پیچھے جائے کہ اس نے دیکھا کہ لومڑیوں نے حملہ کرکے لومڑیوں کی کھال میں لومڑ بنا ایکسٹو کو اغوا کرکے لے جارہی ہیں۔۔۔۔۔
صبیح کو خطرے کا احساس ہوگیا ، وہ سب کو چھوڑ کر لومڑیوں کے تعاقب میں گیا جو ایکسٹو کو اٹھائے بھاگ رہی تھیں، جنگل کے آدھ فرلانگ شمال کی طرف جاکر لومڑیوں نے ایکسٹو کو اپنے ایک سردار کے سامنے ڈال دیا ، ایکسٹو نےگھگھیاتے ہوئے کہا ،اپنی کھال لے کر مجھے چھوڑ دو۔۔۔۔لیکن لومڑیوں نے دھمکی دی کہ انہوں نے ہمارے بہت سارے ساتھیوں کو ہلاک کردیاہے جس کا ثبوت تمہارے جسم پر ان کی کھال ہے۔
ایکسٹو نے کہا"قسمیں مجھے معلوم نہیں، میری بات پر یقین کرو۔۔۔وہ قسم قسم کہتا رہالیکن لومڑیوں نے ایکسٹو کی ایک نہ سنی اور اس پر حملہ کردیا۔۔۔صبیح نے اپنی جان کی پراہ نہ کرتے ہوئے ایکسٹو کی جان بچائی اور پھٹی کھال پر ایک لومڑی کی دم کاٹ کر پیوند لگادی۔

صبیح نے ایکسٹو کی رہنمائی کی اور ڈاکٹر بھائی کے کیمپ کے قریب چھوڑ آیا،جہاں سےڈاکٹر بھائی نے انہیں باحفاظت اپنی امان میں لے لیا۔

باقی کی کہانی پھر کیمپ سے شروع ہوگی ۔
ایکسٹو نے ہوشیار بنتے ہوئے اپنے مدگار صبیح پر الزام تراشی کی ہے اب انہوں نے کوئی لطیفہ گوئی کی مشق کی تو جوابی کاروائی کے لیے جنگل میں سے نہ نکل سکے گا۔
;)


 
Last edited:

X 2

 
Super Star
Most Valuable
Dynamic Brigade
Expert
Writer
Joined
Apr 25, 2018
Messages
643
Likes
1,676
Points
592
#3
لیں جی اس کہانی کا پول بھی کھل گیا ہے صبیح بھائی کتنا دور دور رہ کر کیا کیا کرتے تھے سب پڑھ لیں

X2 here once again
 

X 2

 
Super Star
Most Valuable
Dynamic Brigade
Expert
Writer
Joined
Apr 25, 2018
Messages
643
Likes
1,676
Points
592
#4
ایکسٹو نے ہوشیار بنتے ہوئے اپنے مدگار صبیح پر الزام تراشی کی ہے اب انہوں نے کوئی لطیفہ گوئی کی مشق کی تو جوابی کاروائی کے لیے جنگل میں سے نہ نکل سکے گا۔
وہ ایکسٹو ہی کیا جو کسی کی دھمکی سے ڈر جائے

اور دھمکی بھی اس کی جسے اگر ایکسٹو بروقت کاروائی نہ کرتا تو اب تک لومڑ کی دُم لگ چکی ہوتی


بٹن چباکے
:LOL::ROFLMAO::D:p:p
 

UrduLover

 
Super Star
Dynamic Brigade
Designer
Teacher
Writer
Joined
May 9, 2018
Messages
1,555
Likes
1,115
Points
287
Location
Manchester U.K
#5
رمضان کریم مبارک اللہ سب کو اس ماہ کی برکتوں سے فائدہ اٹھانے کی توفیق عطا کرے آمین

 

Sabih Tariq

 
Super Moderator
Dynamic Brigade
Teacher
Writer
Joined
May 5, 2018
Messages
833
Likes
1,446
Points
452
Location
Central
#7
وہ ایکسٹو ہی کیا جو کسی کی دھمکی سے ڈر جائے

اور دھمکی بھی اس کی جسے اگر ایکسٹو بروقت کاروائی نہ کرتا تو اب تک لومڑ کی دُم لگ چکی ہوتی


بٹن چباکے
:LOL::ROFLMAO::D:p:p
کہانی میں وضاحت ہوگئی ہے، آخری قسط میں مزید معلوم ہوجائے گا۔
:giggle:
 
Top